Home / جاگو ڈیلس نیوز / لم اثاثہ کی جانب سے حماد خان کے دیوان کی تقریب رونمائی کے موقع پر ڈیلس میں مشاعرہ کی ماہانہ محفل مقامی شعراء نے اپنا کلام پیش کیا ۔قلم اثاثہ مقامی شعراء کو پڑھنے کے مواقع فراہم کرے گی

لم اثاثہ کی جانب سے حماد خان کے دیوان کی تقریب رونمائی کے موقع پر ڈیلس میں مشاعرہ کی ماہانہ محفل مقامی شعراء نے اپنا کلام پیش کیا ۔قلم اثاثہ مقامی شعراء کو پڑھنے کے مواقع فراہم کرے گی

قلم اثاثہ کی جانب سے حماد خان کے دیوان کی تقریب رونمائی کے موقع پر ڈیلس میں مشاعرہ کی ماہانہ محفل
مقامی شعراء نے اپنا کلام پیش کیا ۔قلم اثاثہ مقامی شعراء کو پڑھنے کے مواقع فراہم کرے گی۔ خالد عرفان
ٍڈیلس (راجہ زاہد اختر خان زادہ) فوٹو اظہر منور (2کالم)
امریکی معاشرہ میں موجود ہمارا ادبی حلقہ یہاں پر پروان چڑھنے والی نسلوں کو اپنے آبا ؤ اجداد سے ورثے میں ملی تہذیب کو زندہ رکھنے کیلئے اپنے مثبت کوششوں میں مصروف ہے۔
ڈیلس میں ادبی تنظیم قلم اثاثہ کی جانب سے امریکہ میں رہنے والے شعراء کے ساتھ اسطرح کی محفلیں اس عزم سے تجدیدکا تسلسل ہیں جسکا مقصد اسلامی و مشرقی علوم فنون سے کمیونٹی کو آگاہی فراہم کرنا ہے۔ڈیلس میں ہونے والے مشاعرہ کی اس محفل میں نیویارک سے خصوصی دعوت پر آنے والے شاعر پروفیسر حماد اور معروف طنز و مزاح کے شاعر و میزبان خالد عرفان نے طنز و مزاح کے تیر برسائے۔
مشاعرہ کی صدارت اُردو گھر ڈیلس کے بانی ڈاکٹر عامر سلمان نے کی دیگر شعراء جسمیں سید یونس اعجاز ، نورا روی،غزالہ حبیب ،ڈاکٹر شمثہ قریشی اور دیگر نے اپنے کلام کے ذریعے معاشرہ کی داخلی زندگی اور اپنے بباطن کا اظہار اشعار کے ذریعہ کیا ۔
قلم اثاثہ کے بانی خالد عرفان اور مہمان خصوصی پروفیسر حماد خان کا کہنا تھا کہ امریکہ میں اسطرح کی محفلیں ،علمی گفتگو کے ذریعہ معاشرہ میں موجود مثبت پہلوں کو چاک کرنے اور فکر کی گہرائیوں میں جا کر سوچنے کا موقع فراہم کرتی ہیں ۔خالد عرفان کا کہنا تھا کہ قلم اثاثہ کی تشکیل کا مقصد معاشی شعراء کو ادبی ماحول فراہم کرنا ہے کینکہ جو بھی مشاعرہ منعقد کیا جاتا ہے اسمیں انکو پڑھنے کا موقع بہت کم ملتا ہے

Check Also

‎تبدیلی، میں کیسے اعتبارِ انقلابِ آسماں کرلوں ؟

تبدیلی، میں  کیسے اعتبارِ انقلابِ آسماں کرلوں ؟   تحریر راجہ زاہد اختر خانزادہ مولانا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *