Home / جاگو ٹیکنالوجی / وزیر اعظم کی یوٹیوب اور ٹیکنالوجی کمپنیوں کے سربراہان سے ملاقات

وزیر اعظم کی یوٹیوب اور ٹیکنالوجی کمپنیوں کے سربراہان سے ملاقات

وزیر اعظم عمران خان نے یوٹیوب اور سافٹ ویئر کمپنی SAP سمیت ٹیکنالوجی اور ڈیجیٹل دنیا کے سربراہان سے گفتگو کرتے ہوئے انہیں پاکستان میں سرمایہ کاری اور ملک کی مثبت تصویر کشی کی پیشکش کی ہے۔

وزیر اعظم ان دنوں ورلڈ اکنامک فورم کے اجلاس میں شرکت کے لیے سوئٹزرلینڈ کے شہر ڈیووس میں موجود ہیں اور اس دوران وہ دنیا کے اہم سیاسی، تجارتی اور ٹیکنالوجی کے امور کے ماہرین سے ملاقات میں مصروف ہیں۔

مزید پڑھیں: وزیراعظم عمران خان ‘عالمی اقتصادی فورم’ میں شرکت کیلئے ڈیووس پہنچ گئے

سسٹم ایپلیکیشن اینڈ پراڈکٹ کے چیف ایگزیکٹو سے ملاقات

عمران خان نے دنیا کی سب سے بڑی سافٹ ویئر انٹرپرائز کمپنیوں میں سے ایک سسٹم ایپلیکیشن اینڈ پراڈکٹ (SAP) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر کرسچن کلائن سے ملاقات کی اور ان سے حکومت کے ‘ڈیجیٹل پاکستان’ کے اقدام میں مدد کی درخواست کی۔

ملاقات کے موقع پر مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ، مشیر کامرس عبدالرزاق داؤد، وزیر اعظم کے معاون خصوصی سید ذوالفقار عباس بخاری اور ڈاکٹر معید یوسف اور غیر ملکی سرمایہ کاری کے سفیر علی جہانگیر صدیقی بھی موجود تھے۔

کرسچن کلائن نے وزیر اعظم کو بتایا کہ SAP کا پاکستان سے 20 سال پرانا اور گہرا رشتہ ہے اور حکومت پاکستان کی تنخواہوں اور پنشن کے نظام کو ڈیجیٹل خطوط پر استوار کرنے کا منصوبہ انہی کا تیار کردہ ہے۔

وزیر اعظم نے کرسچن کلائن کو بتایا کہ حکومت پاکستان نے شہریوں کی شکایات کے ازالے، حکومتی دفاتر کے انتظامی امور میں بہتری اور ان امور کی بہتر انداز میں انجام دہی سمیت دیگر حکومتی امور کو بہتر انداز میں انجام دینے کے لیے ڈیجیٹل ایپلی کیشنز کو استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: افغانستان میں جنگ بندی کے امکانات موجود ہیں، عمران خان

وزیر اعظم نے SAP کو حکومت کے ڈیجیٹل پاکستان کے اقدام کو سپورٹ کرتے ہوئے اہم یونیورسٹیز کے تعاون سے نوجوانوں کو تربیت دینے اور ڈیجیٹل صلاحیتوں سے لیس کرنے میں مدد کرنے کی دعوت دی۔

انہوں نے سافٹ ویئر ایپلی کیشن اینڈ پراڈکٹ کو پاکستان میں سافٹ ویئر لیب کے قیام کی بھی دعوت دی تاکہ پاکستان میں SAP کے لیے سافٹ ویئر انجینئرنگ کی جا سکے۔

SAP کے چیف ایگزیکٹو آفیسر نے وزیراعظم کی جانب سے حکومتی اداروں اور معاشی شعبے کو ڈیجیٹل خطوط پر استوار کرنے کے عزم کو سراہا اور جرمنی میں نوجوان سافٹ ویئر انجینئر کو تربیت فراہم کرنے کا وعدہ کیا تاکہ وہ پاکستان میں سافٹ ویئر تیار کر سکیں۔

یوٹیوب و سیمنز کے سربراہان سے ملاقات

وزیر اعظم نے یوٹیوب کی سربراہ سوسین ووجیسکی سے بھی ملاقات کی جس میں پاکستان میں ڈیجیٹل میڈیا کی سربراہ تانیہ ایدروس، وزیراعظم کے معاون خصوصی سید ذوالفقار عباس اور غیرملکی سرمایہ کاری کے سفیر علی جہانگیر صدیقی موجود تھے۔

مزید پڑھیں: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ جلد پاکستان کا دورہ کریں گے، شاہ محمود قریشی

ملاقات کے دوران یوٹیوب پلیٹ فارم کو پاکستان کے مثبت تشخص کو اجاگر کرنے کے لیے استعمال کرنے پر زور دیا گیا۔

اس موقع پر یوٹیوب پلیٹ فارم کو پاکستان میں سیاحت اور تعلیم کے فروغ کے ساتھ ساتھ سرمایہ کاروں کی توجہ کے حصول کا ذریعہ بنانے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس کے علاوہ عمران خان نے ٹیکنالوجی کمپنی سیمنز کے سربراہ جو کیسر سے بھی ملاقات کی جس میں سیمنز کو پاکستان میں تربیتی مہارت کا پروگرام متعارف کرانے کی دعوت دی گئی۔

وزیر اعظم نے پاکستان کے توانائی کے شعبے میں سیمنز کی مسلسل خدمات کو سراہتے ہوئے کہا کہ نوجوان کو مختلف صلاحیتوں سے لیس کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہے اور سیمنز سے اس خواہش کا اظہار کیا کہ وہ حکومت کے ہنرمند جوان پروگرام کے تحت پاکستانی نوجوانوں کو اعلیٰ ترین ٹیکنالوجی کی فراہمی کا پروگرام تعارف کرائیں۔

ان کا کہنا تھا کہ نوجوان کو صلاحیتوں سے لیس کرنے سے ملازمت کے مواقع بڑھنے کے ساتھ ساتھ ملک بھی معاشی طور پر مستحکم ہو گا۔

یہ بھی پڑھیں: سعودی عرب نے ایمازون کے سی ای او کا فون ہیک کرنے کے الزامات مسترد کردیے

انہوں نے سیمنز کے سربراہ کو دورہ پاکستان کی دعوت دیتے ہوئے پاکستانی یونیورسٹیز کو جدید ترین ٹیکنالوجی کے حوالے سے تعلیم کی فراہمی کے سلسلے میں بھی تعاون کی بھی دعوت دی۔

اردن کے وزیر اعظم، ایوانکا ٹرمپ سے ملاقات

ایوانکا ٹرمپ وزیر اعظم سے ملاقات کر رہی ہیں — فوٹو: ثنااللہ خان
ایوانکا ٹرمپ وزیر اعظم سے ملاقات کر رہی ہیں — فوٹو: ثنااللہ خان

علاوہ ازیں اردن کے وزیر اعظم عمر رزاز اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی صاحبزادی ایوانکا ٹرمپ نے بھی ڈیووس میں عالمی اقتصادی فورم کے سالانہ اجلاس کے موقع پر وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی۔

ڈیووس میں عالمی اقتصادی فورم کا اجلاس 21 جنوری سے 23 جنوری تک جاری رہے گا۔

عالمی اقتصادی فورم کی 50ویں سالگرہ کے موقع پر منعقد ہونے والے رواں برس کے اجلاس کا موضوع ’اسٹیک ہولڈرز برائے مربوط و پائیدار دنیا‘ رکھا گیا ہے۔

فورم سے سیاسی رہنما، بزنس ایگزیکٹوز، بین الاقوامی اداروں کے سربراہان اور سول سوسائٹی کے نمائندے عصر حاضر کے اقتصادی، جیو پولیٹیکل، سماجی اور ماحولیاتی مسائل پر تبادلہ خیال کریں گے۔

وزیراعظم عمران خان پاکستان کے وژن اور معیشت، امن و استحکام، تجارت، بزنس اور سرمایہ کاری کے مواقع سے متعلق پاکستان کی کامیابیوں سے آگاہ کریں گے۔

عمران خان ڈیووس میں مقبوضہ جموں و کشمیر کی موجودہ صورت حال کو بھی اجاگر کریں گے اور اہم علاقائی اور بین الاقوامی امور پر پاکستان کے نکتہ نظر پر بھی روشنی ڈالیں گے۔

Check Also

کیا یہ کچھووں کا ’سینگ والا ڈائنوسار‘ تھا؟

زیورخ: سوئٹزرلینڈ، کولمبیا، وینزویلا اور برازیل کے سائنسدانوں پر مشتمل تحقیقاتی ٹیم نے وینزویلا اور …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *